Urdu Ghazal || Pita Hu Sharab Ya Sabit To Kigeay || Urdupoetrywala4u


Urdu Ghazal || Pita Hu Sharab Ya Sabit To Kigeay || Urdupoetrywala4u



Urdu Ghazal

Urdu Ghazal


غزل


پیتا ہوں میں شراب یہ ثابت تو کیجیے
مانا کہ ہوں خراب یہ ثابت تو کیجیے

دل توڑنا کسی کا زمانے کے خوف سے
ہوتا ہے گر ثواب یہ ثابت تو کیجیے

کس نے کہا یہ تم سے کہ برباد ہو گئے
آنکھوں کے میرے خواب یہ ثابت تو کیجیے

ٹوٹے ہیں آندھیوں سے یہ مانا کہ پھول سب
ٹوٹے ہیں گر گلاب یہ ثابت تو کیجیے

روتی رہی ہے روشنی ظلمت کے دور میں
کس نے کہا جناب یہ ثابت تو کیجیے






Urdu Ghazal || Pita Hu Sharab Ya Sabit To Kigeay || Urdupoetrywala4u





  • If You Like This Don't Forgot to Share it With Your Friends