In Dilbaro Sa Kia Kahay Mazloom ISHIQ Hum || Meer Taqi Meer


Meer Taqi Meer



ان دلبروں سے کیا کہیں مظُلومِ عشقِ ہم

ناچار ظلم و جور و ستم ان کے سہہ گئے


In Dilbaro Sa Kia Kahay Mazloom ISHIQ Hum

Na Char Zulm-O-Jor-O-Sitam In Ka Sha Gay


میر تقی میر